جے آئی ٹی بنانانوازشریف کو راہ فراردیناہے اعتزاز احسن

Image result for ‫اعتزاز احسن‬‎

اسلا مآباد(مانیٹرنگ ڈیسک)اعتزاز احسن کا کہنا تھا کہ تین ججز کا فیصلہ ناقص ہے اور جے آئی ٹی بنانا نواز شریف کو راہ فرار دینے کے مترادف ہے، اکثریتی فیصلے سے نظریہ ضرورت کی بو آ رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دو سینئر ججز کا فیصلہ تین ججز پر حاوی ہے کیونکہ 2 ججز نے نواز شریف کو نااہل قرار دیا ہے جب کہ باقی تین ججز نے اس رائے کی نفی نہیں کی ہے بلکہ ایک مختلف رائے دی ہے۔سینیٹر اعتزاز احسن نے کہا کہ سپریم کورٹ کی روایت رہی ہے کہ 1993 سے آج تک شریف خاندان کے حوالے سے نرم رویہ رکھا گیا
، 1993، 1996 میں اور اصغر خان کیس کی مثالیں ہمارے سامنے ہیں، مسلم لیگ (ن) سپریم کورٹ پر حملہ کرتی ہے، چیف جسٹس اور ججز کو پچھلے دروازے سے بھاگنا پڑتا ہے لیکن آج تک ان کے خلاف کچھ نہیں ہوا۔ 1999 میں بے نظیر بھٹو کے خلاف فیصلہ آتا ہے جس کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل ہوتی ہے، اور اپیل میں سیف الرحمان سینئر جج سے کہتے ہیں کہ آپ کیس کا فیصلہ کل تک کر دیں کیونکہ وزیراعظم ایسا چاہتے ہیں اور مجرموں کو زیادہ سے زیادہ سزا دی جائے، ان آڈیو ٹیپس کی بنیاد پر لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ مسترد کر دیا جاتا ہے اور ہائی کورٹ کے تین ججز کو فارغ کر دیا جاتا ہے، یہ سب چیزیں واضح کرتی ہیں کہ میاں نواز شریف پر کوئی انگلی نہیں اٹھاتا۔

Scroll To Top